Chalchaya.Com is a horror stories, scary stories, and mystery stories website in urdu language.

دستک

دستک کی آواز کتنی گہرائی رکھتی ہے اپنے اندر ۔ ۔ ۔ کتنے راز چھپے ہوتے ہیں اس آواز میں ۔ ۔ نہ جانے کون ہو گا دروازے پر ؟کوئی…

Continue Reading دستک

پھر ایک رات

تھکن سے میرا برا حال تھا ۔ پورے ڈھائی گھنٹے گروسری اسٹور میں گذار کر،سامان سے لدے ہوئے تھیلے اٹھا کر جب میں گھر میں داخل ہوا  میرے منہ میں…

Continue Reading پھر ایک رات

او میرے حسیں

کیاہوا،یہ آج دودھ کم کیوں ہے؟ ۔ ہوم ورک کرتے ہوئے امی کی آواز میرے کانوں میں پڑی ۔ وہ باجی! آج پھر حویلی والوں نے سارا دودھ خرید لیا…

Continue Reading او میرے حسیں

پیاری عذرا

  اگست7 ،پیاری عذرا ،میری پیاری دوست،میری ساتھی اور میری اکلوتی عزیز بہن عذرا ،اسلام وعلیکم آج کئی مہینوں کے بعد تم سے مخاطب ہوں،خط میں "مخاطب" لکھنا کچھ عجیب…

Continue Reading پیاری عذرا

پکار

جنوری 1947 کی ایک شدید یخ بستہ صبح ۔فجر ویلے ۔ حی علی الفلاح کی آواز پر حسبِ معمول کوثر کی آنکھیں پٹ سے کھل گئیں ۔ ’’ابھی اٹھتی ہوں‘‘…

Continue Reading پکار

قدرت

تپتی دوپہر میں بڑے سے میدان میں بڑی ہی چہل پہل تھی۔ شدید گرمی سے قطعاً بے نیاز بچے اور جوان بڑا ہی انجوائے کر رہے تھے۔ درختوں تلے جا…

Continue Reading قدرت

خیرات

اچھی طرح نہا دھونے کے بعد تقریباً نیا جوڑ ا پہنا پالش کئے ہوئے جوتے پیروں میں ڈالے ۔ برش اٹھا کر تیزی سے بالوں میں پھیرا ۔ آئینے میں…

Continue Reading خیرات

وہ کون تھی؟

راستے پر آہستہ سے چلتے ہوئے جیسے ہی مزار کا گُنبد نظر آنے لگا میرے قدموں میں تیزی آگئی۔ مزار جس کا میں زکر کر رہا ہوں بہت بڑے رقبے…

Continue Reading وہ کون تھی؟

بےوفا

میں بلکل بے حِس و حرکت بیٹھا اپنے سامنے رکھے ہوئے کافی کے مگ گُھورے جا رہا تھا۔ ’’مسٹر طارق‘‘ میں نے چونک کر سامنے بیٹھے شخص کو کھوئی کھوئی…

Continue Reading بےوفا

دی لیٹر پیڈ

آپ نے اپنے مدّاحوں کو پیغام دیا ہے کہ اب آپ مزید ناول نہیں لکھیں گے۔ مگر آپ کو لکھنا ہے میرے لئے، اگر آپ نے ایسا نہیں کے تو…

Continue Reading دی لیٹر پیڈ

چُپ

مّما! میرے شولڈرز میں بہت ہو رہا ہے۔Pain مغرب کی نماز پڑھتی امّاں جی کے کانوں مین مِیشا کی آواز پڑی لیپ ٹاپ گود میں رکھ کر بیٹھی ہوی مہرین…

Continue Reading چُپ

واپسی

ڈور بیل کی آواز پر اس نے چونک کر دروازے کی طرف دیکھا۔ اس انداز کو وہ ہزاروں میں پہچان سکتی تھی۔ اس نے بڑھ کر دروازہ کھول دِیا۔ اس…

Continue Reading واپسی

دی ریڈ روز

مجھے تو یہ کوئی چڑیل معلو م ہوتی ہے.....نینسی نے میرے کان میں  سرگوشی کی اَس کی نظریں لان میں پودوں کو پانی دیتی مسز بیکر پر جمی ہوئی تھیں۔…

Continue Reading دی ریڈ روز

دی فون کال

اس کے چہرے پر دیوانگی برس رہی تھی۔ ہلکی بڑھی ہوئی شیو اور بکھرے بالوں کے ساتھ وہ سخت پریشان نظر آرہا تھا۔ .....ے 17 بار.....‘ ’ پورے 17 بار…

Continue Reading دی فون کال

بھیڑیا

وہ بلکل میرے قریب سے گزر گئی۔ میرے تمام جسم میں سنسنی پھیل گئی۔ ویسے تو اس کا بے حد حَسین چہرہ ، اس کی بے حد خوبصورت (مگرسرد) نیلی…

Continue Reading بھیڑیا

کون؟

سبزیا ں توڑنے میں پھر ان کو ٹوکری میں احتیاظ سے رکھنے میں اس کو دو گھنٹے سے زیادہ لگ گئے۔ شکر ہے‘‘ کچھ دن کا کام تو سمنیٹ گیا ۔…

Continue Reading کون؟

تہہ خانہ

دروازہ بند ہوتے ہی مکمل تاریکی چھاگئی ۔ میں نے ٹٹول کر دیوار کا سہارا لیا ۔اور پہلی سیڑھی پر قدم رکھ دیا ۔ آہستہ آہستہ احتیاط سے دو سری…

Continue Reading تہہ خانہ

مہمان

بس سے اتر کر میں نے سامان کا تھیلا ایک ہاتھ سے دوسرے ہاتھ میں منتقل کیا۔اور اپنے راستے پر چل پڑا پیدل۔ گوکہ راستہ مختصر ہرگز نہیں تھا مگر…

Continue Reading مہمان

رتنا منزل

 میں آج پھر جان بوجھ کر اس کے سامنے سے گذرا۔ اس نے آنکھیں اٹھا کر مجھے دیکھا اور جیسے لمحے بھر کو ٹھٹھک گئی۔ پھر فوراً نظر چرا کر…

Continue Reading رتنا منزل